ispaghol_k_fayde

Ispaghol k Khas Faiday

اسپغول کے کرشماتی کمالات

اسپغول کے نام سے آپ واقف ہی ہوں گے۔ خاص طور پر وہ لوگ جو کہ امراض معدہ کا شکار رہتے ہیں ان کے لیے تو یہ نئی چیز نہیں ہے۔ لیکن اسپغول کے بہت سے ایسے بھی فوائد ہیں جن سے عام طور پر لوگ واقف نہیں ہیں۔ جی ہاں آج ہم اسپغول کے کچھ ایسے ہی شاندار فوائد Ispaghol k Khas Faiday آپ کے لیے لائے ہیں۔

اسپغول کیا ہے؟

اسپغول فارسی زبان کا لفظ ہے۔ اسپغول کو عربی میں بزر قطونا اور انگریزی میں Seed Spogul کہتے ہیں۔ اس کا پودہ عام طور ایک سے دیڑھ فٹ تک اونچا ہوتا ہے۔ اس کی ٹہنیا ں باریک ہو تی ہیں اور پتے لمبے ہوتے ہیں ۔ اس کا رنگ سرخی ما ئل سفید اور سیا ہ ہوتا ہے۔

اسپغول نیم گلابی اور سفیدی مائل چھوٹے چھوٹے بیج ہوتے ہیں جنہیں بھگو نے یامنہ میں کچھ دیر رکھنے سے لعاب پیدا ہوتا ہے ان دانوں کے اوپر سے سفید چھلکا الگ کر لیا جاتا ہے جسے سبوس اسپغول یعنی اسپغول کا چھلکا یا بھوسی کہا جاتا ہے گھروں میں عام طور یہی بھوسی استعمال کی جاتی ہے یہ بھوسی لعاب دار اور پھیکی ہوتی ہے۔

اسپغول کے خاص فائدے Ispaghol k Khas Faiday

– اسپغول مزاج میں سرد و تر ہوتا ہے اس لیے اس کا لعاب بخار وغیرہ کی گرمی اور پیاس کودور کرنے میں بہت موثر سمجھاجاتا ہے۔ گرمی کے بخار اور خون کے جوش کو تسکین دے کر طبیعت کو نرم کر تا ہے۔

– سینہ، زبان، حلق کے کھردراپن اور صفراوی و دموی بیماریوں کے لیے مفید ہے۔

– دماغی طاقت بڑھاتا ہے۔ دما غی کام کرنے والوں کے لیے ضروری ہے کہ رات سو تے وقت پانچ دانے گری بادام چبا کر کھائیں اور بعد میں ایک تولہ اسپغول دود ھ میں ملا کرپئیں۔ یہ مقوی دما غ نسخہ ہے۔

– قبض کشا ہے۔ آنتو ں میں پھسلن پیدا کر تا ہے۔ اس کے لیے رات سو تے وقت ایک گلا س دودھ میں یک تولہ اسپغول کا چھلکا ملا کر تین چار منٹ کے بعد استعمال کرنے سے کھل کر اجابت ہو تی ہے۔ یہ دائمی قبض میں بھی بے حد مفید ہے۔

– مردانہ امراض میں اسپغول ایک بہت کارآمد دوا کے طور پر استعمال کی جاتی ہے۔ جریا ن میں اسپغول کا چھلکا ہمراہ شربت بزوری یا صندل کے، صبح نہا ر منہ پینا فائدہ مند ہے۔ سوزاک میں اسپغول کا چھلکا پانی یا شربت کے ہمرا ہ چند یوم تک استعمال کرنے سے شفا ہوتی ہے۔

– تمام اقسام کے امراض معدہ میں اسپغول کا چھلکا بے انتہا فائدہ مند ہے۔ اسپغول کا جو شاندہ بطور مسکن و ملین مشروب سو زش معدہ اور زخم معدہ اور سینے کی جلن میں مفید ہے۔ معدے کی بیماریو ں، خاص طور پر السر میں بے حد مفید ہے۔

– آنتوں کے زخمو ں اور مروڑ ہونے کی حالت میں بے حد مفید ہے۔ اس کے لیے اسے شربت صندل میں ایک بڑا چمچہ ڈال کر پلا نا مفید ہوتا ہے۔

– منہ کے چھالے جو کہ معدہ کی خرابی کی وجہ سے ہوتے ہیں کی تکلیف میں اسپغول کا استعمال بے حد مفید ہے۔ ایسی صورت میں دہی میں ایک بڑا چمچہ اسپغول کی بھوسی ملا کر صبح نہار منہ کھایا جائے اور ہر کھانے کے بعد دہی کے ایک یا دو چمچ استعمال کریں۔

– اسپغول بواسیری خون کو روکتا ہے۔ آنتوں کی جلن کو جن میں بواسیری خون کا دباؤ بڑھا ہوتا ہے کم کرتا ہے۔

– اسپغول دمے اور خشک کھانسی وغیرہ میں بھی بہت کام کی چیز ثابت ہوتا ہے۔ روزانہ 10 گرام اسپغول کی بھوسی دودھ یا پانی کے ساتھ کم از کم 40 دن تک کھانے سے کھانسی ٹھیک ہو سکتی ہے۔

– یچش کے دوران 10گرام اسپغول آدھا پاؤ دہی میں ملا کر ایک گھنٹے رکھنے کے بعد کھائیں۔ ایک دو روز کے استعمال سے پیچش ٹھیک ہوجائے گا۔