meetha_khana

Khane k Baad Meetha Khana

کھانے کے بعد میٹھے کی خواہش کیوں

اگر آپ بھی ان لوگوں میں سے ہیں جن کو کھانا کھانے کے فوری بعد کچھ میٹھا کھانے کی خواہش ہوتی ہے Khane k Baad Meetha Khana تو یہ مضمون آپ کے لیے ہی ہے۔ کیا آپ نے کبھی غور کیا کہ ہمیشہ ہی یا کبھی کبھار ہی لیکن کھانا کھانے کے بعد میٹھی چیز کھانے کا دل کیوں کرتا ہے۔ کیا یہ صرف ایک غذائی عادت ہے یا اس خواہش کے پیچھے کچھ خاص عوامل بھی کار فرما ہوتے ہیں۔

ہمارے پاک و ہند میں یہ کافی عام رجحان ہے کہ بچپن اور نوجوانی میں کھانے کے بعد کچھ میٹھا لازمی کھایا جاتا ہے۔ تو میٹھے کی یہ طلب کیوں ستاتی ہے؟ خاص طور پر اگر آپ صحت مند رہنا چاہتے ہیں تو اس کا جواب جاننا ضروری ہے۔

پیدائشی رجحان

اگر تو آپ کو میٹھا کھانا زیادہ ہی پسند ہے تو ہوسکتا ہے کہ یہ آپ کی غلطی نہ ہو، درحقیقت لوگوں کے اندر پیدائش سے ہی میٹھی غذاؤں کو ترجیح دینے کا رجحان ہوتا ہے۔ اس کی وجہ یہ ہے کہ تلخ اور ترش غذائیں اکثر معدے کے لیے بھاری ثابت ہوتی ہیں، تو قدرتی طور پر انسان کے اندر اس سے بچنے کے لیے میٹھے سے محبت پیدا ہوتی ہے۔ یہی وجہ ہے کہ زیادہ توانائی والی غذا، جیسے چینی، غذائی قلت کے دوران بقاء فراہم کرتی ہے۔

بچپن کی غذائی عادات

عام طور پر لوگوں کے اندر جس کھانے کی خواہش زیادہ ہوتی ہے، اس کی وجہ بچپن کی غذائی عادات ہوتی ہیں۔ ماہرین کے مطابق عام طور پر بچوں کو انعام کے طور پر جو غذائیں دی جاتی ہیں وہ بڑے ہونے کے بعد بھی لوگوں کو اچھا محسوس کرنے میں مدد دیتی ہیں۔ ماہرین کا کہنا تھا کہ اگر ماں یا باپ اکثر کچھ میٹھا جیسے بسکٹ، ٹافیاں یا چاکلیٹ دیتے ہو تو آپ کے اندر یہ احساس جڑ پکڑ لیتا ہے کہ یہ غذائیں خوشی کا احساس پیدا کرتی ہیں۔

زیادہ کاربوہائیڈریٹس کا استعمال

مشرقی پکوان اکثر کاربوہائیڈریٹس یا نشاستہ دار غذا پر مشتمل ہوتے ہیں، یہ نقصان دہ نہیں مگر یہ ایک بڑی وجہ ہے جو ہر کھانے کے بعد میٹھا کھانے کی خواہش بھڑکاتی ہے۔ درحقیقت نشاستہ دار غذائیں بلڈ شوگر کی سطح کو بڑھاتی ہیں اور اس کے نتیجے میں کچھ میٹھا کھانے کی خواہش بڑھ جاتی ہے۔

نمکین غذائیں

اگر آپ کو غذاؤں میں زیادہ نمک پسند ہے تو یہ جان لیں کہ توازن برقرار رکھنے کے لیے جسم کے اندر نمکین کھانے کے بعد کچھ میٹھا کھانے کی خواہش پیدا ہوتی ہے۔ یہی وجہ ہے کہ فاسٹ فوڈ یا فرنچ فرائز کے ساتھ سافٹ ڈرنک کی خواہش یا استعمال ہوتا ہے۔

نفسیاتی وجوہات

میٹھے کی خواہش کے پیچھے نفسیاتی مسائل بھی ہوسکتے ہیں، جب ہم کچھ کھاتے ہیں تو اس کے ہمارے مزاج پر اثرات مرتب ہوتے ہیں خصوصاً میٹھا کھانے کے بعد، ایسا کرنے پر دماغ کو لت پیدا ہوتی ہے کیونکہ میٹھا کھانے سے ایک کیمیکل سیروٹونین کا اخراج ہوتا ہے جو خوشی، سکون اور آرام کا احساس دلاتا ہے۔

پانی کی کمی

میٹھا کھانے کی خواہش بڑھنے کی ایک وجہ کمزور نظام ہاضمہ بھی ہوتا ہے، ایسا عام طور پر ڈی ہائیڈریشن کی وجہ سے ہوتا ہے، کھانے کے آدھے گھنٹے بعد پانی نہ پینے سے غذا کا مناسب طریقے سے ہضم ہونے کا امکان کم ہوجاتا ہے، جس سے میٹھی غذاؤں کی خواہش بڑھتی ہے۔